January 24, 2018=National News

پیر دم کرتا اور جنات کے کہنے پر بچیوں سے زیادتی کرتا تھا، ملزم عمران کا بیان

قصور (ویب ڈیسک) ننھی زینب کو یادتی کے بعد قتل کرنے والے عمران کو پولیس چند روز پہلے بھی روز مرہ کی کارروائی میں گرفتار کرچکی ہے لیکن ملزم نے ڈی این اے کروانے سے انکار کردیا اور غشی اور مرغی کا ڈرامہ کرنے کی وجہ سے پولیس نے اس کو رہا کردیا۔ جس کے بعد ملزم نے گھر سے نکلنا چھوڑ دیا اور اپنا حالیہ بھی پوری طرح تبدیل کرلیا اور کام پر بھی جانا چھوڑ دیا۔ جس وجہ سے اس کے گھر والوں کو بھی اس پر شک گزرنا شروع ہوگیا لیکن گزشتہ روز دوبارہ پولیس نے ملزم کو روز مرہ کی کارروائی کے مطابق ڈی این اے کرنے کے لئے گھر سے پکڑا اور ڈی پی او آفس لے جاکر اس کا ڈی این اے کرنا چاہا لیکن اس نے پہلے ہی اعتراف جرم کرلیا جس پر پولیس نے اسے ڈی آئی جی سامنے پیش کردیا۔ پوچھ گچھ کرنے کا ملزم نے اعتراف کیا کہ میرا پیر مجھ پر دم کرتا ہے جس وجہ سے مجھ میں جن حاضر ہوجتے ہیں اور میں یہ گھناﺅنا کام کرنے پر مجبور ہوجاتا ہوں۔

پولیس ذرائع کے مطابق ملزم نے زینب کے علاوہ قصور میں سات بچیوں کے ساتھ ساتھ زیادتی کے قتل کے علاوہ وہاڑی اور دیگر علاقوں میں مزید آٹھ سے زائد بچوں کے ساتھ زیادتی کا انکشاف بھی کیا ہے۔ پولیس نے ملزم کے بیان کے بعد اس کے حافظ سہیل نامی پیر کو بھی قصر کے علاقے سے گرفتار کرلیا گیا ہے جس کو مزید تفتیش کے لئے سی آئی اے پولیس کے حوالے کردیا گیا ہے۔ پولیس کے مطابق ملزم انتہائی شاطر ہے اور کئی بار پولیس کو چکما دینے میں کامیاب ہوچکا ہے۔ ملزم کئی دنوں سے پولیس کی تفتیش اور ڈی این اے کے متعلق لوگوں سے معلومات حاصل کررہا تھا۔ پولیس نے ملزم کو انتہائی سکیورٹی میں لاہور منتقل کردیا جس کو سپریم کورذٹ بنچ کے سامنے پیش کیا جائے گا۔

Like Our Facebook Page

Latest News