February 21, 2018=National News

سی پیک چین اور پاکستان کے ہاتھ سے پھسلنے لگا،سعودی عرب اور ایران بھارت کی مدد کو آن پہنچے، عرب ممالک بھی ساتھ مل گئے ایسا کام ہو گیا کہ جس کی امید ہی نہ تھی، مودی نے بیسٹ شاٹ کھیل دی

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)بھارت کی خارجہ پالیسی میں اہم اقدام، مسلم ممالک کے ساتھ ایسے معاہدےکہ ترقی کے تمام ریکارڈ ٹوٹنے کے قریب، ایران اور سعودی عرب کے ساتھ ایک ہی وقت میں اپنی معیشت کو بہتر کرنے کیلئے معاہدے کر لئے۔ تفصیلات کے مطابق بھارت کی خارجہ پالیسی میں اہم اور ذہین اقدامات کرتے ہوئے مودی حکومت نے مسلم ممالک کے ساتھ ایسے معاہدے کئے ہیں کہجن سے اندیشہ ہوتا ہے.

کہ بھارت ترقی کے تمام ریکارڈ توڑنے والا ہے۔ نجی ٹی وی دنیا نیوز کے پروگرام ’’آج کامران خان کے ساتھ‘‘میں سینئر صحافی و تجزیہ کار کامران خان کا کہنا تھا کہ خارجہ پالیسی کا شاید ہی کوئی ایسا ماہر ہو جو اس بات سے اختلاف رکھتا ہوکہ بھارت اپنی خارجہ پالیسی انتہائی سمارٹ انداز سے چلا رہا ہے، بھارت نےایک ہی وقت میں سعودی اور ایران کے ساتھ مثالی تعلقات قائم کر رکھے ہیں اور ان کو ایک نئے لیول میں لے کر جایا گیا ہے اور وہ بھی ایک ساتھ اور ایک ہفتے کے دوران، کامران خان کا کہنا تھا کہ سعودی عرب اور ایران ایک دوسرے کے شدید مخالف ہیں اور ایک دوسرے کے دشمن سمجھے جاتے ہیں مگر بھارت نے ان دونوں کے ساتھ ایک ہی انداز اور ایک ہی قوت کے ساتھ جڑ گیا ہے۔ کامران خان کا کہنا تھا کہ ایران کے صدر حسن روحانی جس وقت بھارتی وزیراعظم کے ساتھ اہم نوعیت کے معاہدے کر رہے تھے اسی وقت بھارتی وزیر خزانہ ارن جیٹلی سعودی عرب میں سفارتی اور معاشی معاہدے کر رہے تھے۔ ایک جانب ایران سے بھرپور معاہدے ہو رہے تھے دوسری جانب ریاض میں بھارت سعودی عرب کے ساتھ معاہدے کر رہا تھا۔ ایران کے صدر حسن روحانی نے اپنے دورہ بھارت کے دوران 9اہم معاہدوں پر دستخط کروائے، جس میں سب سے اہم ترین معاہدہ ایران کی چاہ بہار بندرگاہ کے حوالے سے تھا جس کے تحتایران نے چاہ بہار بندرگاہ کا آپریشنل کنٹرول بھارت کے حوالے کر دیا ہے۔ اس کے علاوہ ایران اور بھارت کے درمیان پورٹ اینڈ شپنگ، انرجی، ایگریکلچرل،
ٹیکسیشن اینڈ ریونیو کے شعبے میں تعاون سمیت دیگر معاہدات شامل تھے۔ ایران اور بھارت کے درمیان یہ فیصلہ بھی کیا گیا ہے کہ ڈپلومیٹک پاسپورٹ کے حامل بھارتی بغیر ویزے کے بھارت آسکتے ہیں جو کہ ایک بہت ہی اہم پیش رفت کہی جا رہی ہے۔اپنے دورہ بھارت کے دوران ایرانی صدر حسن روحانی نے بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کے ہمراہ ایک مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہماری بات چیت بہت تعمیری اور مثبت رہی ، ہمارے درمیان اچھی انڈرسٹیڈنگ ہے

Like Our Facebook Page

Latest News