September 21, 2018,.ڈیلی بائیٹس

16 سالہ نوجوان کو سڑک پر 10 لاکھ روپے سے بھرا پرس مل گیا، اصل مالک تک پہنچادیا لیکن پھر اس کام کا اسے انعام کیا دیا گیا؟ لوگوں کو پتہ چلا تو انٹرنیٹ پر ہر کسی کو غصہ چڑھ گیا کیونکہ۔۔۔

سانتا باربرا(نیوز ڈیسک) آج کے زمانے میں کسی کو دس روپے مل جائیں تو وہ واپس کرنے کی بجائے جیب میں ڈالنے کو ترجیح دیتا ہے مگر اس امریکی لڑکے نے تو کمال ہی کر دیا۔ اسے ہزاروں ڈالر سے بھرا پرس ملا تو اس نے بغیر کسی تاخیر کے اسے اصل مالکن تک پہنچا دیا۔ اور پھر پرس کی مالکن نے بھی تو کمال ہی کر دیا۔۔۔ اپنے 10 ہزار ڈالر واپس ملنے کی خوشی میں لڑکے کو صرف ایک سو ڈالر کا انعام دیا۔

دی مرر کے مطابق ریاست کیلیفورنیا سے تعلق رکھنے والے سکول کے طالب علم نے پرس اور اس میں موجود 10ہزار ڈالر کی رقم واپس کی تو ہر ایک نے اس کی بہت تعریف و توصیف کی لیکن اس اچھے عمل کے نتیجے میں اسے انعام صرف 100 ڈالر کا ملا تو سوشل میڈیا پر بہت برہمی کا اظہار بھی کیا گیا۔ رامی زینی، جس کی عمر 16 سال ہے، کا کہنا ہے کہ وہ سانتا باربرا میں اپنے سکول سے واپس جارہا تھا کہ جب سڑک پر گرے ہوئے سیاہ رنگ کے پرس پر اُس کی نظر پڑی۔ اس نے دیکھا کہ پرس میں ہزاروں ڈالر کے نوٹ تھے لیکن اس نے یہ پرس اپنے پاس رکھنے کی بجائے اپنے والدین کے ذریعے پولیس تک پہنچایا، جہاں سے اسے اصل مالکن تک پہنچا دیا گیا۔
سانتا باربربا کاﺅنٹی کے پولیس سربراہ نے لڑکے کی دیانتداری کی بہت تعریف کی اور پولیس کے فیس بک پیج پر اس کیلئے تعریفی کلمات بھی پوسٹ کئے۔ انہوں نے لکھا ”اس دنیا میں کہ جہاں ہم بری خبروں کی زد میں ہیں، ہم یہ بتانے میں جوش اور فخر محسوس کررہے ہیں کہ 16 سالہ لڑکے رامی زینی نے سڑک پر ملنے والا پرس پولیس کے حوالے کیا ہے جس میں 10ہزار ڈالر کی رقم اور کچھ دیگر ضروری اشیاءہیں۔ یہ لڑکا لگونا بلانکا ہائی سکول میں زیر تعلیم ہے۔ رامی ہم آپ کے شکرگزار ہیں کہ آپ نے اپنے اچھے عمل سے ہم سب کے لئے مثال قائم کی ہے!“ سوشل میڈیا صارفین نے بھی اس بات پر بہت خوشی کا اظہار کر رہے تھے، مگر پھر یہ پتہ چلا کہ پرس کی مالکن نے رامی کو صرف 100 ڈالر بطور انعام دئیے ہیں، جس پر سوشل میڈیا کو موڈ یکسر بدل گیا۔
ہاکنز ماروا نے اپنی رائے کا اظہار کرتے ہوئے لکھا ”اگر میں اس خاتون کی جگہ ہوتی تو اس لڑکے کو کافی زیادہ انعام دیتی کیونکہ اگر وہ دیانتداری سے کام نہ لیتا تو 10ہزار ڈالر کبھی واپس نہ ملتے، جو کہ بہت بڑی رقم ہے۔“ ایلس ٹڈیسکو کا کہنا تھا ”100 ڈالر ؟واقعی؟ میں تو اسے 1000 ڈالر بھی دے کر کم سمجھتی۔
اور وارگا پیٹرز نے طنزیہ انداز میں کہا ”پورے 100 ڈالر کا انعام دے دیا، ارے واہ یہ کتنی سخی خاتون ہے۔“ اگرچہ سوشل میڈیا صارفین رامی کو دئیے گئے معمولی انعام پر بہت برہم ہیں، لیکن یہ لڑکا تو واقعی بہت بھلے مانس ہے۔ اس کا کہنا تھا کہ ”مجھے خاتون نے زبردستی انعام دے دیا۔ میں نے تو محض اپنا فرض ادا کیا تھا۔ میں نے وہ پرس اس لئے واپس کر دیا کہ مجھے یہی کرنا چاہیئے تھا۔“

Like Our Facebook Page

Latest News