January 25, 2018.ڈیلی بائیٹس

میں نے اپنی گرل فرینڈ کو قتل کرکے اس کی لاش کے ساتھ یہ شرمناک حرکت کی اور اب اپنی زندگی بھی ختم کر رہا ہوں کیونکہ۔۔۔‘ 19 سالہ لڑکے نے سوشل میڈیا پر ایسی خوفناک ترین بات لکھ دی کہ ہر شخص کانپ اُٹھے

اسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) روس میں ایک نوجوان نے اپنی گرل فرینڈ کو قتل کرکے اس کے ساتھ ایسی انتہائی شرمناک حرکت کر ڈالی کہ جان کر ہر شخص خوف سے کانپ اٹھے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق 19سالہ ارتیوم آئسخوکوف نامی اس نوجوان نے اپنی تاتیانا نامی گرل فرینڈ کو قتل کیا اور اس کی لاش کے ساتھ جنسی درندگی کرتا رہا اور پھر سوشل میڈیا پر آ کر اس نے مقتولہ کے والدین کے نام ایک پیغام پوسٹ کر دیا جس میں اس نے کہا کہ ’اب میںبھی خودکشی کرنے لگاہوں۔‘

رپورٹ کے مطابق اس پیغام میں ارتیوم نے تاتیانا کے والدین کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ”میں نے آپ کی بیٹی کو گلہ دبا کر قتل کیا لیکن اس کا دل پھر بھی دھڑک رہا تھا جس پر میں نے چھری سے اس کا گلہ کاٹ دیا اور پھر اس کے ساتھ جنسی زیادتی کر ڈالی۔ اس کے بعد میں نے سینڈوچ کھایا اور کئی گھنٹے بعد دوبارہ اس کے ساتھ جنسی زیادی کی ہے اور اب میں خود بھی جان دینے لگا ہوں۔ میں جانتا ہوں کہ میں نے بہت خوفناک کام کیا ہے لیکن میں نے وہی کیا جو میں چاہتا تھا۔“پیغام کے آخری میں ارتیوم نے اپنے اور ارتیانا کے والدین سے معافی مانگی اور انہیں وہ جگہ بتائی جہاں سے ان دونوں کی لاشیں مل سکتی تھی۔رپورٹ کے مطابق ارتیوم نے اس کے بعد پھندہ لے کر خودکشی کر لی۔ جب پولیس پیغام میں ارتیوم کی بتائی ہوئی جگہ پر پہنچی تو وہاں ارتیوم اور تاتیانا کی لاشیں موجود تھیں۔بتایا گیا ہے کہ ارتیوم آئی ٹی کا طالب علم تھا جبکہ تاتیانا اے گریڈ میں تھی اور ماسکو کی بہترین یونیورسٹی میں پڑھتی تھی۔ ارتیوم کو شبہ تھا کہ ارتیانا کے دیگر کئی مردوں کے ساتھ بھی تعلقات ہیں جن میں سے ایک کا نام آئیگور تھا اور وہ سینٹ پیٹرزبرگ کا رہنے والا تھا۔ ان معاشقوں پر ارتیوم نے اسے قتل کر ڈالا۔

Like Our Facebook Page

Latest News